(COMBO) This combination of pictures created on March 07, 2020 shows a small crowd of worshippers around the sacred Kaaba in Mecca's Grand Mosque on March 7, 2020 and a large crowd of worshippers around the Kaaba (Tawaf al-Wadaa) during pilgrimage on August 13, 2019. - Saudi Arabia reopened today the area around the sacred Kaaba, reversing one of a series of measures introduced to combat the coronavirus outbreak. Saudi authorities this week suspended the year-round umrah pilgrimage, during which worshippers circle the Kaaba seven times, and also announced the temporary closure of the area around the cube structure. (Photos by Abdel Ghani BASHIR / AFP)

دنیا بھر کے ممالک حج انتظامات کے سلسلے میں ابھی حتمی معاہدے نہ کریں۔ سعودی وزارت حج و عمرہ کا اہم بیان

سعودی عرب (اردو ٹاؤن اخبار تازہ ترین۔ یکم اپریل 2020ء ) سعودی عرب کے وزیر حج و عمرہ ڈاکٹر صالح بنتن نے کہا ہے کہ دنیا بھر کے ممالک حج انتظامات کے سلسلے میں ابھی حتمی معاہدے نہ کریں۔ ڈاکٹر صالح بنتن نے دنیا بھر کے مسلمانوں سے درخواست کی ہے کہ وہ کورونا وائرس کے حوالے سے منظر نامہ صاف ہونے تک حج اور عمرے کے انتظامات کے سلسلے میں انتظار کریں۔
۔تفصیلات کے مطابق سعودی وزیر حج و عمرہ ڈاکٹر محمد صالح بن طاہر بنتن نے کورونا وائرس کی وجہ سے پیدا ہونے والی غیر یقینی صورتحال کے باعث مسلمانوں سے حج کی تیاریاں موخر کرنے کا کہا ہے۔سعودی وزیر حج و عمرہ ڈاکٹرصالح بن طاہر بنتن نے سرکاری ٹی وی الاخباریہ سے گفتگو کرتے ہوئے کہا ہے کہ کہ سعودی عرب حج اور عمرہ زائرین کی خدمت کے لیے پوری طرح تیار ہے اور سعودی حکومت ان کو کسی بھی وقت آنے کی اجازت دے سکتی ہے۔

لیکن ابھی حالیہ دنوں میں ہمیں عالمی وبا کا سامنا کر رہے ہیں، اللہ تعالی سب کو اس سے محفوظ رکھے۔


قناة الإخبارية@alekhbariyatv

فيديو عاجل | وزير الحج يدعو دول العالم عبر #الإخبارية من أمام #الكعبة_المشرفة التريث في إبرام عقود

#الحج5679:47 AM – Mar 31, 2020Twitter Ads info and privacy608 people are talking about this

انہوں نے کہا جب ویزا سروسز بند کی گئی تو اس وقت سعودی عرب میں پانچ لاکھ عمرہ زائرین موجود تھے اور ہمارے تمام اداروں نے ملکر ان لوگوں کو اپنے وطن واپس پہنچانے میں مدد کی۔کورونا وائرس سے متاثر تمام مریضوں اور وہ بھی جن کے متاثر ہونے کا شبہ تھا ان تمام افراد کا علاج مفت کیا گیا،چاہے وہ شہری ہر ہو غیر ملکی۔
انہوں نے مزید کہا کہ ہم نے تمام مسلم ممالک سے درخواست کی ہے کہ فی الحال حج معاہدے نہ کریں یہاں تک کہ صورتحال واضح ہو جائے۔سعودی عرب کی وزارت حج اور عمرہ نے اس بات کا خیال رکھا کے ان تمام افراد کو جنہوں نے عمرہ پیکیج کی ادائیگی کردی تھی اور کورونا وائرس کے سبب اس کی ۔سعادت سے محروم رہ گئے انہیں ان کی رقم واپس کی جائے گی اس معاملہ کی آن لائن کنفرمیشن کی گئی۔
۔وزیر حج نے کہا کہ سعودی عرب پروازوں پر پابندی کے باعث وطن واپس نہ جاسکنے والے 1200 عمرہ زائرین کی میزبانی کررہا ہے۔ڈاکٹر صالح بنتن نے خانہ کعبہ کے سامنے کھڑے ہوکر سعودی نیوز چینل سے گفتگو میں یہ بھی کہا کہ ایسے تمام عمرہ زائرین کو ان کے پیسے واپس کردیے ہیں جنہوں نے عمرہ ویزا حاصل کرلیا تھا لیکن عمرہ نہیں کرسکے تھے۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here