کورونا کے پاکستانی معیشت پر انتہائی اہم اثرات مرتب ہوئے ہیں اور حکومت پاکستان نے کورونا وائرس کا پھیلاؤ روکنے کے لیے تیزی سے اقدامات کیے، آئی ایم ایف اعلامیہ

لاہور(اردو ٹاؤن تازہ ترین اخبار-17اپریل2020ء) آئی ایم ایف نے پاکستان کے لئے ایک ارب 39 کروڑ ڈالرز کا ریلیف پیکج منظور کر لیا ہے ۔ تفصیلات کے مطابق کورونا وائرس سے نمٹنے کے لئے ایم ایف کے ایگزیکٹو بورڈ اجلاس میں فنڈ کی منظوری دی گئی ہے۔ آئی ایم ایف کے جاری کردہ اعلانیہ میں کہا گیا ہے کہ کورونا کے پاکستانی معیشت پر انتہائی اہم اثرات مرتب ہوئے ہیں اور حکومت پاکستان نے کورونا وائرس کا پھیلاؤ روکنے کے لیے تیزی سے اقدامات کیے، اس مقصد کے لیے معاشی پیکیج کا بھی اعلان کیا گیا اور حکومت عوامی صحت پر اخراجات میں اضافہ کر رہی ہے۔
اعلامیے کے مطابق کوروناوائرس کی وجہ سے پاکستان کی معاشی حالت تنزلی کا شکار ہے جس کی وجہ سے پاکستا ن کو بیرونی فنانسنگ کی ضرورت ہے۔

عالمی مالیاتی فنڈ کا کہنا ہے کہ ایک ارب 38 کروڑ ڈالرز کا پیکیج پاکستان کے زرمبادلہ کے ذخائر کو بہتر کرے گا، پیکیج سے بجٹ کی ضروریات کو پورا کیا جا سکے گا اور پاکستان کو زرمبادلہ ذخائرمیں کمی پرقابو پانے میں مدد ملےگی۔

مزید کہا گیا ہے کہ یہ فنڈ پاکستان کو کورونا وائرس سے نمٹنے کے لئے دیئے گئے ہیں۔آئی ایم ایف حکام کی جانب سے مزید کہا گیا ہے کہ ہم پاکستان کے ساتھ قریبی رابطے میں ہیں، کورونا وائرس ایک مشکل وقت میں ہے، ایسے مشکل وقت میں پاکستان کو فنڈنگ کی ضرورت ہے، کورونا کےاثرات کم ہوتے ہی مذاکرات دوبارہ شروع کیے جائیں گے جس میں 6 ارب ڈالرز کے موجودہ ای ایف ایف پروگرام کے تحت بات چیت ہو گی۔یاد رہے کہ چین کے شہر وہان سے شروع ہونے والے کورونا وائرس نے اب پاکستان میں بھی اپنی تباہی کا سلسلہ شروع کر دیا ہے جس کے بعد ابھی تک پاکستان بھر میں 7018 افراد کورونا وائرس کی وجہ سے متاثر ہو چکے ہیں جبکہ134 افراد کورونا وائرس کا شکار ہو کر جاں بحق ہو گئے ہیں

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here